Pakistan

وزیر اعظم کے بھانجے حسان نیازی کا ےکبر کم نہ ہوا! معمولی سی ٹکر لگنے پر سرعام ڈرائیور کے ساتھ کیا کر دیا؟ جانئے!

Written by Ch Abdullah

گاڑی نے ہلکی سی ٹکر مار دی، جس پر حسان نیازی نے ڈرائیور کو دھمکیاں دیں اورٹکر مارنے والی گاڑی وزیراعظم عمران خان کے بھانجے بیرسٹرحسان نیازی نے گاڑی کو ٹھوکر مارنے والے ڈرائیور کو دھمکیاں اور گالیاں دیں جبکہ اس کی گاڑی کی چابی نکال کر گاڑی کی لاتیں بھی ماریں۔ تفصیلات کے مطابق پی آئی سی حملہ کیس کے ملزم اور وزیراعظم کے بھانجے بیرسٹر حسان نیازی اپنی گاڑی کو دوسری گاڑی کی ٹکر لگنے پر آپے سے باہر ہوگئے۔

حسان نیازی نے دوسری گاڑی کی ٹکر لگنے پر چابی نکال لی، اور اس گاڑی کو لاتیں ماریں۔ معلوم ہوا ہے کہ دونوں گاڑیاں نجی کلب میں داخل ہورہی تھیں کہ حسان نیازی کی گاڑی سے دوسری گاڑی کی ہلکی سی ٹکر ہوگئی، جس پر حسان نیازی غصے میں آگئے، جس گاڑی نے حسان نیازی کی گاڑی کو ٹکر ماری تھی، انہوں نے اس گاڑی کی چابی نکال کرگالیاں دینا شروع کردیں۔

بتایا گیا ہے کہ حسان نیازی نے ٹکر مارنے والی گاڑی کو دوبارہ بدلہ لینے کیلئے واپس اپنی گاڑی سے ٹھوکر بھی ماری۔ واضح رہے وزیر اعظم عمران خان کے بھانجے اور سینئر تجزیہ کار حفیظ اللہ نیازی کے صاحبزادے حسان نیازی پی آئی سی میں وکلاء اور ڈاکٹرز کی ہنگامہ آرائی کے کیس میں بھی ملزم ہیں۔ لاہور کی انسدادِ دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے پی آئی سی حملہ کیس میں بیرسٹر حسان نیازی سمیت 10 وکلا ء کی عبوری درخواست ضمانت میں 15 جنوری تک توسیع دے رکھی ہے۔
انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نمبر ایک کے جج ارشد حسین بھٹہ نے درخواستوں پر سماعت کی۔ بیرسٹر حسان نیازی سمیت دیگر ملزمان وکلاء عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے 10ملزمان وکلا ء کو شامل تفتیش ہونے اور فوٹو گرامیٹک ٹیسٹ کرانے کا حکم دیا۔ ملزمان کے وکلا ء نے عدالت کو بتایا کہ ہم شامل تفتیش ہو رہے ہیں، ہماری طرف سے کوئی اعتراض نہیں۔ عدالت نے تمام دلائل سننے کے بعد وکلا ء کا فوٹو گرامیٹک ٹیسٹ کرانے کا حکم دے دیا۔ جبکہ تمام ملزمان کی عبوری ضمانت میں 15 جنوری تک توسیع کردی تھی۔

About the author

Ch Abdullah